پبلک لائبریری بسیمہ میں ایک لیکچر سیشن کا انعقاد کیا گیا جس کا عنوان "دور حاضر میں نوجوانوں کے کردار اور ذمہداریاں ” تھا۔

Spread the love

پبلک لائبریری بسیمہ میں ایک لیکچر سیشن کا انعقاد کیا گیا جس کا عنوان "دور حاضر میں نوجوانوں کے کردار اور ذمہداریاں ” تھا۔

لیکچر ڈگری کالج کوئٹہ کے پروفیسر عبید ابدال بلوچ اور یونیورسٹی آف تربت پنجگور کیمپس کے ایڈمنسٹیٹر ڈاکٹر افتخار بلوچ نے دیا۔

عبید ابدال نے لیکچر کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ آج کے نوجوانوں پہ بہت سی ذمہداریاں عائد ہوتی ہے ، جس کو پورا کرکے سماج میں تبدیلی لائی جاسکتی ہے یقیناً سماجی بہتری یا مثبت تبدیلی کا تعلق نوجوانوں کے شعور و آگائی سے ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ شعور نصابی کتابوں سے ہٹ کر ادبی اور دیگر جنرل کتابوں کے مطالعہ کرنے سے ملتا ہے جو اس وقت ہماری سب سے بڑی ضرورت ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے دور حاضرمیں لائبریریوں کے ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے کہا کہ طلباء کو لائبریریوں کو فعال بنانے کیلئے حتی الوسع کوشش کرنا چاہیے یہ بھی نوجوانوں کے ذمہداریوں میں ایک اہم ذمہداری ہے۔

لیکچر پروگرام میں ڈاکٹر افتخار بلوچ نے کہا کہ جب نوجواں اپنے کردار ادا کرینگے تو قوم ترقی کرے گا۔ آج کل نوجوانوں کو تعلیم زیادہ سے زیادہ حاصل کرنا چاہیے کیونکہ اپنے ذمہداریوں کو سمجھنے کا بہتریں زرائع تعلیم ہے ۔ تعلیم صرف ڈگری یا نوکری لینے کی نام نہیں ہے بلکہ تعلیم کا تعلق شعور سے ہے جو نوجوانوں کو سمجھنا چاہیے ۔

انہوں نے اپنے باتوں کو جاری کرتے ہوئے کہا کہ نوجوان خود کو محدود نہ سمجھے بلکہ ان پہ ذمہداری عائد ہوتی ہے کہ وہ دوسرے علاقے لوگوں کے ساتھ اپنا رابطہ رکھیں تاکہ بلوچ نوجوانوں کے آپس میں ایک اچھی رابطہ ہو سکیں اور وہ اجتماعی طور پر اپنے کردار کو سامنے لاسکیں۔
پروگرام کے دوسرے حصے میں طلباء اور پروفیسرز کے درمیان سوال و جواب کا سیشن رہا ۔

پروگرام کے اخر میں منتظمیں کی طرف سے پروفیسر عبید ابدال اور ڈاکٹر افتخار کو کتابوں کا تحفہ پیش کیا گیا۔ اور نوجوانوں نے اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ بھی ایسے پروگرام منعقد کیا جائے گا۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!