براہوئی متل وساہت ءُ بجازی ٹی فرق

Spread the love
نوشت نصیب ڈومکی 
دُنیا ٹی چندی گڑاک اسے نہ اسے وڑ ئسے اٹ زیبائی ئسے نا درشانی ءِ کیرہ۔ ولے باز وخت دُن مریک کہ ا وفتا زیبائیءِ ودّفنگ کن پین گڑاسینا ضرور دو مریک ، دُنکہ ا سے مَش ئس مرے اونا تینا ہم اسے ندارہ ئس ضرورمریک ولے ہمو مَش آن چشمہ ویہہ اونا ماس آ بلو دیرئس مرے دیر نا دا پار اے پار آن وڑ وڑنا درخت ء پُھل آتا قطار مرے ایلو ہموڑے ذیل ذیل نا چُکاک مریر گُڑا ہمو مَش نا زیبائی ہنداخہ پین ودک۔
اگہ ہندا مثال زبان ئسے کن مرے تو دا پاننگ مریک کہ دنیا ٹی دا وخت اِسکان چندی زبانک ساڑی ءُُ ہمو غٹ زبان آتا پاننگ ءُُ نوشت آتے ٹی اسے گچین ءُ چَس ءُ زیبداری ئس نظر بریک۔ گڑا ہندا ہی چس ءُ زیبداری ٹی متل ءُ وساعت ءُ بجازی تا بھلو دوئسے گو کہ زبان سے زیبدار کننگ کن گرائمرءُ ُ لوزءُ ُُ پین ہندنگا گڑاتا کڑدس ضرور مروئے مگہ زبان تینے زیات آن زیات گچین کننگ کن متل و وساہتءُ بجازی تا محتاج ءِ۔ اگہ داہر مُسٹ ءِ زبان ئسے آن جتا کیس تو ہمو زبان بے رنگءُ بے ڈنگا مریک دا ردِٹ ڈاکٹر عبدالرّحمن براہوئی تینا کتاب ’’وساہتاک‘‘ ٹی نوشتہ کیک۔
’’ متل وساہتاک ہرزبان نا ادب ٹی ہریر ہرافتے آن بیدس ادب بے مزہءُ ُ بے طعام مریک۔ ‘‘(براہوئی : 5:1979 )
ایلو زبان تے آن بار براہوئی زبان ہم متل و ساہت ءُُ بجازی آن پراے براہوئی ہیتءُ گپ مرے یا نوشت دافک زیات آن زیات استعمال مریرہ ۔ ہندن براہوئی زبان ءِ ڈولدار جوڑ کننگ کن بھاز بھلو کڑدئسے ولے بد قسمتی دادے کہ دافتے آباز کم کاریم مسونے ۔ ہرافتے آن باز کمءِ نوشت نا دروشم آتنگانے وکل نت ٹی بے اَنا کچ ہم افس۔ ایلو دا کہ ہر مسٹ اسٹ ایلو آن ہندن خڑک خنگرہ کہ لس بندغ دافتے ٹی فرق ءِ پوہ مننگ کپک ہندا باروٹ غمخوار حیاتؔ نوشتہ کیک
’’ دا بھاز چیڑگن ءُُ وئیل سے لس مخلوق انت کہ خوانندہ غاک ہم دافتے ٹی فرق ءِ تپسہ انتے کہ دافتا ادائیگی نا موقع محل ٹی ہچو فرق ئس اف۔ لس ہیت و گپ اٹ مخلوق متل وسایت و بجازی تے مون مستی السّہ کیک و گیشتر مخلوق داکل ءِ وساہت پائک‘‘
(حیات: 32:2017 )
دا ہیت اٹ ہچو شک ئس اف کہ متل وساہت ءُُ بجازی اسٹ ایلو آن باز خڑک ءُُ مگہ دافتا اسٹ ایلوڑان فرق ئس ضرور ہرے۔ گڑا ہندا ہی فرق ءِ کشنگ ءُُ پوہ مننگ کن اول داالمی ئے متل وساہت ءُُ بجازی تا جتا جتا گونڈ گونڈوجاچ النگ ءِ ۔ 
متل :
متل ہمو جملہ یا فقرہ غاتے پارہ ہرافتے ننا بھاز مست نا بندغ آک تینا چندی تجربہ ءُُ آزموندہ غاتے آن پد جوڑ کرینو۔ ہرافتے ٹی پنت شونی ءُُ عقلمندی نا باز بلوہیت ئس ڈکوک مریک۔
متل دُنیا نا غٹ زبان تے ٹی ساڑی ہرے ایلو داکہ متل نا پلہو ہنداخہ درتالان ءِ کہ دا ناسرحال آک زند نا ہر بشخ آتے آمننگ کیرہ۔ ہنداخاطرآن متل تا چندی تعریف آک درشان کننگانو۔ ہندن متل ءِ اُردو ٹی ضرب المثل ءُُ انگریزی ٹی Proverb پارہ۔ انگریزی ٹی دانا تعریف ءِ کہ 
” An old and common saying : Which is repeated; especially, and exprience and observation; a makim; a saw; and adg”
(Hamariweb.com)
ہندا وڑ اٹ ڈاکٹر عبدالرحمن متل نا باروٹ تینا کتاب’’وساہتاک‘‘ ٹی نوشتہ کیک۔
’’متل بندغ نا زند ٹی مروکا ہیت و گپ ءُُ واقعات ءُُ حالت آتا عرخ و خسی مریک نا باوہ پیرہ غاک کہ انتس خنانو اوفک ہندن پار ینو اوفتا ہندا ہیتاک اوفتا مچ آزند نا برمک ءُُ ہندا خاطران ہندا ہیتاک (متلاک) خل نا چشخ ءُُ دافک بے مٹ ءُُ بے بہا ءُُ ٹیکی ءُُ ، دافتے ٹی دزسار سختی بخیل، امیر غریب ، لنگڑی ، سیری ، مڑدی ، لغوری ، دوستی ، ایلمی ، سیالداری نیکی جوانی شری، خرابی ءُُ زند نا بود نا دیخو دیخو گڑاس واقع بیان ہرے‘‘ (براہوئی : 5:1997 )
ہندن براہوئی زبان نا متل آتا جاچ الننگے تو ہمو غٹ سرحال آک اوفتیٹی نظر بریرہ ہرافتے کہ ڈاکٹر عبدالرحمن براہوئی درشان کرینے۔
داکان بیدس براہوئی متل آتا باروٹ محمد اکر م رخشانی ؔ پائک ۔
’’اگہ براہوئی متل آتا سرحال آتا بارواٹ غور کننگے تو دافتیٹی پنت و شون مہر و مابت نیکی، بندی ، مڑدی و لغوری ، مال ، مالداری کشت، کشار ہندن پین پین زند نا ہر بشخ نا باروٹ متل آتیٹی کشادہی ہرے‘‘ (رخشانی : 11:2015 )
براہوئی متل آک اِرا بھلو بشخ آتے آتالان ءُُ ۔ اسٹ ہمو د ءُُ برافک اخلاق نا دائرہ ٹی ءُُ ہرافتے ٹی عقلمندی نا پنت شونی نا کلہو اس ساڑی ئے دُنکہ۔
’’پین نا مار آن تینا مسڑ جوانے‘‘
’’گنوک ءِ قدر تسوس چوٹ آتون غالی آبریک‘‘پین پین
ارٹمیکو ہمو متل آک ءُُ ہرافتا سرحال آک اخلاق نا دائرہ غان پیشن ءُُ مگہ اوفتے ٹی ہم عقلمندی ءُُ پنت شونی نا ہم اسے باز بلو کلہو ئس نظر بریک دُنکہ ۔
’’ایٹ ءِ لِٹک ئس مرے تینا پُنڈوءِ ڈکہ‘‘پین پین
داکان بیدس چندی ہندنومتل ہرے ہرافک ایلو زبان تے آن بسونو براہوئی زبان ٹی جاگہی مسونو دُنکہ۔
براہوئی: لیپ ان نت ءِ مرغن کپہ( اخس کہ نا لیپ ءِ ہموخہ نت ءِ مریف)
اُردو: جتنی چادر دیکھو اتنے ہی پاؤں پھیلاؤ۔
فارسی: باندازہ گلیم پادراز کن۔
انگریزی: Cut your cout according to your cloth
(براہوئی : 18:1979 )
مگہ براہوئی زبان نا تینا جند نا متل آک ہمو بازے بے کچ ءُُ ہرافک زیات آن زیات پہلوالی زند نا درشانی ئے کیرہ دُنکہ۔
’’ڈوئک بیش کنیک خراس‘‘
(حیات: 65: 2017 )
’’ایٹ ءِ کٹی الیک شوان نا اِرغ ءِ کُنیک ‘‘
(براہوئی : 28: 1979 )
داڑتون اوار براہوئی زبان ٹی وساہت ءُُ بجازی تا ہم بھاز بھلو دُنیا سے داہرمسٹ نا وار مننگ نا سبب آن دافتے ٹی کس ئس خاصو فرق ئس کننگ کتنے۔ گڑا ہندا ہی فرق ءِ کشنگ کن متل ہم نا جاچ ان پد وساہت ءُُ بجازی نا ہم جتا جتا گونڈ گونڈ ءُُ جاچ الوئی مریک۔ 
وساہت:
دُنکہ مستی درشان کننگاکہ متل بجازی تون اوار زبان ئسے نا زیبائی گچین ءُُ اسلوب ٹی رنگ اتنگ کن وساہت ہم اسے تینا کرِڈس مریک وساہت ہمو فقرہ ءِ پارہ ہرانا پد رند اٹ چنکو قصہ یا واقع ئس مریک ۔ ہمو قصہ یا واقع حقیقی مننگ کیک ءُُ فرضی ہم ۔ ولے اوٹی مثال سینا درشانی ایلو پنت نصیحت تون اوار اوار مخنگ ءُُ ڈِینڈ مننگ نا ہیت ئس مریک ہرا ہندنو واقعہ سینا وختا درشان کننگک۔ 
وساہت کن انگریزی ٹی Aphorism یا Mxim نا لوز استعمال مریک ولےPoplular Oxford Dictionary ٹی وساہت (کہاوت) کن Proverb نا لوز ہم استعمال مسونے۔
ہندن اُردو ٹی وساہت کن لوز کہاوت ءُُ ضرب المثل ہم استعمال مسونے دُنکہ خلیل صدیقی وساہت نا باروٹ پائک۔
’’کم ءُُ بھاز غٹ زبان تے ٹی قومی تلمیحات آک (ہیت سے ٹی قصہ سینا پارہ غا اشارہ کننگ) ہنوکا زمانہ نا حقیقت مرے یا فرضی ولے رائج انگا واقعات ءُُ ثقافتی روایت آتا حوالہ اٹ کلام یا ہیت سے ٹی خاصیت ودی کرسا کرینو۔ ہمو حوالہ غاک فقرہ یا جملہ غاتے ٹی اسہ بھلو معنی اس درشان کرینو او بھاز آاستعمال آتیان پد لسانی روایت نا بشخ جوڑمسونو اوفتے کہاوت یا ضرب المثل پارہ‘‘
(صدیقی 39:2016 )
دا تعریف دا معلوم مریک کہ وساہتاک حقیقی ءُُ قصہ مننگ کیرہ ءُُ فرضی ہم ۔ حقیقی وساہت آتا کردار آک زیات آن زیات بندغ آک مننگ کیرہ ولے باز وخت سہدار آک ہم مننگ کیرہ ہندنکہ’’ ہچ او بروے‘‘ ولے فرضی وساہت آتا کردار آک زیات آن زیات سہدار ءُُ جوجُک ، نہار ءُُ پین گڑاک ہم مننگ کیرہ۔ دُنکہ ’’شوک ءِ دیر درے پارے جل نا چوٹ اسکان کاریم ئس ئس‘‘ ولے دا ہیت ٹی شک اف کہ متل مرے یا وساہت ہڑتوماک مثال سینا درشانی ءِ ضرورکیرہ مگہ دافتے ٹی فرق ئس ضرور ہرے مگہ خلیل صدیقی دافتے فرق ءِ کتنے۔
دُنیا نا ایلو زبان تے آن بار براہوئی ٹی ہم وساہت ساڑی ہرے ہندن براہوئی ٹی وساہت آتے آمچ ءِ باز پٹ او پول نا کاریم ہم مسونے ہمو پٹ ءُُ پولی کاریم تے ٹی گڑاس تحقیق کار آتے آن وساہت نا باروٹ خیال آتے درشان کرینو ہرافتیان گڑاس دا وڑ ٹی او وساہت نا بارہ اٹ سوسن براہوئی ؔ تینا خیال آتے درشان کرسہ پائک
’’ وساہت ہموہیت یا جملہ ءِ کہ ہرانا پد و رند اٹ قصہ یا داستان ئس مریک ۔نن ہراتم دافتا فنی مطالعہ ءِ کینہ تو خبر تمک کہ دا باز مُست زمانہ ئسے اَن جوڑ مریسہ بسونو او مستی کن ہم جوڑ مرسہ کرورولے دافتا تعلق افسانوی ادب تون اف کہ ہرادیب تینے آن تینٹ وساہت تخلیق کے بلکہ وساہت دُن مریک کہ اسٹ سے آن ہندنو وئیل واقعہ یا چوٹی و چٹی ئس تما یا ہراٹی جوانی خرابی فائدہ یا نقصان اس مس یا اوٹی پنت او نصحیت نا دلچسپ او ہیت ئس مس ہراکہ نا قابل ءِ گیرام ئس تو ہمو دے مخلوق گونڈ و فقرہ یا جملہ سے ٹی موقع او مناسبت نا لحاظ ا ٹ کرسہ وساہت کیرہ‘‘
(سوسن 62:2016 )
ہندا باروہ اٹ منیر حنفی ؔ پائک کہ :
’’وساہت آتا ہم زبان سینا زیبائی او ہنینی ءِ ودیفنگ ٹی بھلو کڑد ئس مریک وساہت ہمو ہیت یا گال آتے پارہ ہرافک ئسے بلو تجربہ او آزموندہ ئسے آن پد جوڑ مسونو۔ دافتیٹی اسے قصہ ءُُ واقعہ ئس گنڈوک مریک جاگہ ئس وساہت اس بننگ آن پد واقعہ یا قصہ است آ بریک بلو خان نا برام ، خواری پوک آ جعفر خان، نصروئی نا کفن، برافک اسے واقعہ سینا یات گیری کرسہ اونا کوالخوائی ءِ کیرہ‘‘
(حنفی: 23:2013)
دا ردٹ غمخوار حیاتؔ نوشتہ کیک ۔
’’وساہت نا پد رنداٹ واقعہ یا قصہ ئس مریک ہمو واقعہ غاک بازی آن حقیقت مریرہ وساہت اسے فقرہ سینا صورت ٹی ہمو واقعہ غاتا پارہ غا اشارہ ئس مریک ‘‘
(حیاتؔ 33:2017: )
داڑے دا پاننگ مریک کہ داہیت ٹی ہچو شک ئس اف کہ وساہت نا پد رند اٹ اسے چنکو واقعہ ءُُ قصہ ئس مریک ایلو وساہت آک تجربہ او آزموندہ آغاتے آن پد جوڑ مریرہ رافتیٹی چٹی او مخنگ یا ڈِینڈ مننگ نا ہیت ئس مریک مگہ دا غٹ وساہت نا بیرہ اسے قسم نا بارہ اٹ ہیت کرینو ہرا ٹی بیرہ حقیقی قصہ غاتا درشانی مریک ۔ مگہ وساہت ٹی فرضی ءُُ واقعہ ہم مننگ کیک ہرافک حقیقی وساہت آتا واقعہ او قصہ آغاتیان بار نظرآن گدرینگوک مفسہ بلکہ آزموندہ غاتیان پد جوڑ مریرہ دُنکہ : 
’’شوک ءِ انگور رسینگتو پارے سور ءِ ‘‘
دُنکہ مُستی پاننگا وساہت اسہ چنکو فقرہ یا جملہ ئس مریک ہرانا پد رند اٹ اسے واقعہ ئس ڈَکّوک مریک دُنکہ:
’’ہچ بروے، نصروئی نا کفن ، حاجی بہلول خان ہلیءُُ پین پین‘‘
ولے باز ہندنو ہم وساہت ہرے ہرافتا پورہ قصہ ہموہی فقرہ ٹی پورہ پورہ درشان مریک دُنکہ :
’’ شوک ءِ دیر درے پارے جل نا چوٹ اسکان کاریم ئس ئس‘‘
’’چیچی پارے اِی او الہ دوشہ استو بندغ ئس کنگن‘‘
دُنکہ مستی درشان کننگا کہ براہوئی زبان متل ءُُ بجازی تو اوار وساہت نا دُنیا ٹی ہم مالہ مال ءِ براہوئی وساہت آتیٹی گڑاس ہندنو وساہت ارے او غٹ براہوئی پاروکا تیٹی مشہور ءُُ دانا کلان بھلا مثال ’’ہچ بروے ‘‘ءِ ولے باز ہندنو وساہت ہم ہرے ہرافک مخصوص آعلاقہ غاتیٹی پاننگیرہ دُنکہ ’’حاجی بہلول خان نا ہلی‘‘ دا وساہت خاران نا مشی آ علاقہ لجے ٹی باز مشہور ءِ دا وساہت ایلو علاقہ غاتیٹی مشہور مف دانا پد رند نا قصہ داوڑ ٹی ءِ کہ:
’’ارا بزغر جوان ڈن سے آ گوبٹ گننگ ٹی مریرہ ہیت ہیت ٹی شکاری حاجی بہلول خان نا بارہ اٹ ہیت او گپ ءِ شروع کیرہ ہندن اسٹ تا پائک کہ حاجی بہلول خان نا ہلی پیہن او سے ایلو پائک نابابا حاجی بہلول خان ہلی مون ءِ ہنداڑان اسٹ ایلو نا جنگ او جھگڑہ مریک اسٹ ایلو تون جنڈ پہ جنڈ مریرہ ہنداڑتون حاجی بہلول خان ہلی آ سوار مُلک سینا لٹ سے آن پاش کیک بزغراک اونا خنگ تون سخت شکی مریرہ انتے کہ ہلی نہ پیہن مریک او نہ مون بلکہ خیسون بھورو ئس مریک ۔‘‘
داڑتون اوار پین ہم چند ی ہندنو وساہت ارے ہرافک مخصوص مخصوص انگا علاقہ غاتیٹی پاننگیرہ ۔
بس داڑے دا پاننگ مریک کہ وساہت نا چاہے ہرا بشخ مرے او متل امبار مثال سے کن مشہور ہرے مگہ متل او وساہت ٹی فرق ضرور ارے ہرا مون مستی درشان کننگانے ۔
بجازی :
ہراڑے کہ متل وساہت او چاچا نا ہیت مریک تو ہموڑے بجازی نا ہم الم ہیت مریک انتے کہ بجازی نا ہم زبان سینا ہیت او گپ مرے یا نوشت اوٹی زیباداری او گیچینی اتنگ ٹی بلو دُو ئسے۔
بجازی ارٹ یا ارٹ آن زیات لوظ مریرہ ہراتینا حقیقی معنی آعلاقہ اسہ پین بجازی او معنہ ئس ایترہ ہندن بجازی نا باروہ اٹ خلیل صدیقی (38:2016:) تینا خیال آتے درشان کرسہ پائک کلمہ یا ہیت آتا اسے ہندنو ترتیب ئس مرے ہرافتا لغوی معنی آن بنا اسے پن بجازی او معنہ ئس ہلنگک اودے بجازی (محاورہ) Idiom پارہ ۔
انگریزی اٹ بجازی نا تعریف ءِ دُنکہ :
"An idiom is commanly used experson whose meaning does not relate to the literal meaning of its words”
(www.grammar-monster.com)
دُنیا نا ایلو ازبان تے آن بار براہوئی زبان بجازی نا دُنیا ٹی مالا مال ءِ ہراوڑ کہ متل او وساہت آتا ذی آ کاریم مسونے ولے براہوئی بجازی تا ذی آ اوفتیان کم کاریم مسونے ۔ براہوئی بجازی تا بارہ اٹ گڑاس نوشتونک آن تینا خیالاتے درشان کرینو ہرافتیان دُنکہ پروفیسر سوسن براہوئی ؔ پائک:
’’لوزآتا ہمو مجموعہ ہرا تینا اصل یا حقیقی یا معنی نا جاگہ غا بجازی او جاگہ سے کن استعمال مرے ہمودے بجازی پارہ ۔‘‘
(سوسن: 65:2016 )
بجازی نا تعریف آن علاوہ سون براہوئیؔ گڑاس بجازی ہم تینا کتاب براہوئی قدیم نثری ادب ٹی نوشتہ کرینے۔اوڑان علاوہ براہوئی بجازی نا بارہ اٹ غمخوار حیاتؔ ، منیر حنفیؔ ، حمید شاہوانیؔ ، ڈاکٹر لیاقت سنیؔ او پین پین تینا کتاب او ایلو رسالہ غاتیٹی نوشتہ کرینو۔
براہوئی بجازی تا ہم اگہ جاچ ہلنگ ءِ تو دا پاننگ مریک کہ متل آتیان مبار سرحال نا بابت اٹ بجازیک ہم ہرا بشخ ٹی تالان او۔ ہرافتیان اسٹ ہمودو ہرافک اخلاقی دائرہ ٹی او دُنکہ : 
’’نت تا اُتہے مننگ‘‘
’’ڈغار نا تین مننگ‘‘
’’پٹ ٹی خل اس شاغنگ‘‘ او پین پین۔
دا کان علاوہ ارٹمیکو ہمو بجازیک او ہرافک اخلاقی دائرہ آن پیشن او ولے او ہم لس ہیت او گپ آ تیٹی استعمال مریرہ دُنکہ:
’’پی نا ڈڈمننگ‘‘
’’شلوار ءِ پُر کننگ‘‘ او پین پین۔
داکان بیدس ہردے ہی زند ٹی متل وساہت امبار بجازیک ہم براہوئی زبان ٹی زیات آن زیات استعمال مریرہ ۔ اوار استعمال مننگ نا سبب آن بجازی تا متل وساہت ٹی فرق ءِ پہو مننگ نا پارہ غا بھاز کم توجہ تنگانے مگہ دافتیٹی اسے بلو فرق ئس ہرے ہردے مون مستی درشان کننگانے۔ 
متل و ساہت ءُُ بجازی ٹی فرق:
براہوئی متل وساہت ءُُ بجازیک استعمال مننگ نا سبب آن اسٹ ایلو آن بازخڑک خنگرہ ۔ ہندا خاطر ان دافتے فرق کننگ اسے مشکل ءُُ کاریم اس خننگک داردٹ براہوئی متل و ساہت ءُُ بجازی تے آ چندی نوشتونک آک کاریم کرینو دافتا فرق ءِ کشننگ نا کوشست ءِ کرینو مگر دافتے اسے خاصو فرق ئس مون آاتنگ کتنو۔
دُنکہ ڈاکٹرعبدالرحمن براہوئی متل آتے مچ کرسا اسے کتاب سے نا دروشم اٹ مون آایسونے مگہ اودے پن ’’وساہتاک ‘‘ نا تسونے ہمو کتاب ٹی وساہت ہرے مگہ اوفتا متل آتا نسبت اٹ بھاز کم ءِ۔
کتاب ٹی جاگہ اس نوشہ کیک ۔
’’براہوئی ٹی دنو ہم متل اریر اوفک ایلو بولی تیٹی ہم ہند بیان ءُُ یا اوفتا معنی گاک ہندن ءُُ منہ دار ءُُ‘‘
(براہوئی: 7:1979)
ولدا 104 براہوئی متل نوشہ کرینے ہم معنہ ءُُ ہم مطلب آاردو انگریزی ءُُ عربی نا متل آتے ہم نوشتہ کرینے ہندن متل آتا گڈ سراٹ نوشہ کیک کہ۔
’’دا منہ وساہت آتا نوشہ کننگ نا مسخت دا ئس کہ ایلو زبان سیٹی ہم ہندنو وساہتاک اریر اوفک ننا ز بان ٹی ءُُ ‘‘
(براہوئی: 21:1979)
داڑے دا ہیت پاش مریک کہ ڈاکٹر عبدالرحمن متل وساہت آتے ٹی فرق کتنے یا کننگ کتنے۔ انتئے کہ ہمو ہی فقرہ غاتے متل ہم پارینے ءُُ وساہت ہم۔
داکان بیدس پین ہم چندی نوشتہ کار اک براہوئی متل وساہتءُُ بجازی تا فرق ءِ کشنگ نا کوشست ءِ کرینو۔ مگر غٹ نا ہیت اسٹ ءُُ اسٹ ایلو ڑان حوالہ غاتے اسکان محدود خنگرہ۔ کل نا ہیت دادے کہ متل ہمو داناتا ہیت آک ءُُ ہرافک مثال سے کن مشہور مریر۔ وساہت ہمو جملہ یا فقرہ مریک ہرانا پدرنداٹ واقعہ یاقصہ ئس مرے۔ بجازی لوز آتا مجموعہ ئس مریک ہرافک تینا اصل معنی آتا علاوہ پین مجازی ءُُ معنی ئس ایترہ۔ ءُُ پین پین ہمو نوشتونک آتے ٹی منیر حنفیؔ ، حاجی عثمان بنگلزئیؔ ، سوسن براہوئی ؔ ءُُ غمخوار حیاتؔ او پین پین اوار او۔
محاصل:(Conculution)
بس بڑز کو نوشت آتا جاچ ءِ النگ آن پد دا پاننگ مریک کہ متل وساہت ءُُ بجازی اخس کہ اوار استعمال مریر مگہ دا اسٹ ایلوآن جتاؤ۔
اگہ اول متل ءُُ وساہت نا جاچ النگ ءِ تو دا پاننگ مریک کہ متل و وساہت ہرتوماک مثال سے کن مشہور ضرور ہریر۔ اڑتوماتا جوڑ مننگ ٹی تجربہ ہم ءُُ آزموندہ غاتاہم باز بلو دوئس مریک۔ مگہ دا ارڑتوماتے ٹی فرق دادے کہ متل آک مست نا دانا ءُُ عقلمند آبندغ آتا بے بہا آہیت آک مریرہ ہرافک آزموندہ غاتے آن پد جوڑ مسونو مگہ دافتا پد رند اٹ اسے سرجمو واقعہ اس مفک دُنکہ ۔
’’ انگور، انگورآتا رنگ ہرفک۔‘‘
’’ خڑ ک نا پیر ءِ قدراف پین پین۔‘‘
داڑے داپاننگ مریک کہ ہمو جملہ یا فقرغاک متل مریرہ ہرافتے ٹی عقلمندی دانا ئی پنت و نصحیت نا ہیتس ضرور مریک مگہ دافتا پدرند اٹ واقعہ قصہ ئس اف۔
ہندن وساہت آک ہم مثال سے کن مشہور مریرہ اوفتے ٹی ہم عقلمندی دانائی ءُُ پنت شونی نا ہیت مریک ۔ وساہت آتا پدءُُ رند والا قصہ یا واقعہ حقیقی مننگ کیک ءُُ فرضی ہم حقیقی قصہ غا زیات آن زیات ڈھینڈ مروک ءُُ مریرہ ہرافتا کڑداراک بندغ آک مننگریرہ کم ءُُ باز سہداراک ہم مننگ کیرہ۔ دُنکہ خواری پوک آ جعفر خان،حاجی بہلول خان نا ہلی او پین پین ہندن خیالی ءُُ فرضی قصہ غاک بندغ آتا جوڑ کروک خنگرہ ہرافتا کڑداراک سہدار ءُُ کم بھاز بندغ آک ہم مننگ کیرہ۔دُنکہ
’’شوک ءِ انگور ارسینگتو پہے سور ءِ‘‘ او پین پین دا فرضی ءُُ وساہت اس مننگ کیک۔
ہندن بجازی او متل نا جاچ النگ ءِ تو دا پاننگ مریک کہ دا اسٹ ایلو تینے آن باز جتاؤ بجازی لوز آتا ہمومجموعہ مریک ہراتینا لغوی معنی غان علاوہ پین معنی ئس ایتک مگہ ہمو معنیِ ءِ درشان کننگ پین لوز آتا محتاج مریک ایلوپارہ غان متل تینا پورہ مطلب ءِ ہمو فقرہ ٹی اتیک دُنکہ متل ئسے 
’’لمہ ءُُ باوہ نا مون چُنا کن چُنا نا مون خل ءُُ مش کن‘‘ ہندن’’ چنائی کننگ‘‘ یعنی نادانی کننگ/ بے وقوفی کننگ دااسے بجازی ئسے دانا مطلب ءِ پوہ مننگ کن دادے جملہ ٹی استعمال کروئی مریک دُنکہ۔
’’کُبین توتینے دُن چنائی کپہ مخلوق مخک نے آ‘‘
ہندن اگہ بجازی ءُُ وساہت نا فرق ہننگ ءِ تو داہم اسہ وڑ استعمال مریرہ دُنکہ ’’ہچ بروے‘‘ دااسہ وساہت سے داہم جملہ ٹی بھاز وخت بجازی آن بار استعمال مریک دُنکہ۔
’’کاریم ءِ آخیر کرینس ہمت کر ختم کتہ۔ ہچ بروے مفہ /کپہ‘‘
حالانکہ ہچ بروے وساہت سے وساہت ءِ پوہ مننگ کن وساہت نا پد رند والا واقعہ ءُُ قصہ ناباروٹ چائنداری المی اے مگہ بجازی تا پد رند اٹ ہچو واقعہ یا قصہ اس اف دُنکہ۔
’’کاٹم ٹی ڈونک اس لگنگ‘‘
’’خن نا سٹننگ‘‘
’’اسپت نا ٹال آسوار کننگ‘‘
’’آسمان ءِ کاٹم آہرفنگ‘‘
’’بے خلنگ‘‘
’’بامس اسکان مننگ ‘‘ او پین پین۔
حوالہ غاک
۱۔ اکرم رخشانی ، یوسف مینگل:البرز:2015 :شعبہ براہوئی بلوچستان یونیورسٹی، کوئٹہ
۲۔ خلیل صدیقی :زبان کیا ہے؟:2016 : بیکن بکس اردو بازار ، لاہور
۳۔ سوسن براہوئی،پروفیسر:براہوئی قدیم نثری ادب: 2016 براہوئی اکیڈمی، پاکستان
۴۔ عبدالرحمن براہوئی:وساہتاک:1979 : براہوئی اکیڈمی، پاکستان
۵۔ غمخوار حیاتؔ : متلاک:2017 : ایچ ای سی۔ بلوچستان یونیورسٹی ، 
شعبہ براہوئی، کوئٹہ
۶۔www.grammar-monster.com/glossary/idiom.html 
۷۔www.hammariweb.com/dictionaries/proverb

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!