بی ایس او بیسک کمیونٹی اسکولز ایجوکیشن پراجیکٹ کے اساتذہ اور طلباء و طالبات کے لئے ہر سطح پر آواز بلند کرے گی ۔صمند بلوچ

Spread the love

بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کوئٹہ زون کے آرگنائزر صمند بلوچ نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے وفاقی حکومت کے پراجیکٹ کے تحت بلوچستان بھر میں قائم بیسک ایجوکیشن کمیونٹی اسکولزپراجیکٹ کے اساتذہ کو مستقل کرکے باقائدہ سرکاری قوانین کے مطابق تنخوائیں دی جائے حکومتی سطح پر کم سے کم اجرت کے اپنے قانون کی خلاف ورزی کرکے اساتذہ کو انتہائی قلیل تنخواہ دی جارہی ہے جبکہ وقت پر انہیں تنخواہ بھی فراہم نہیں کی جاتی اکثر اساتذہ عمر گزرنے کی وجہ دیگر محکموں میں ملازمت کی درخواست بھی جمع نہیں کرسکتے انہیں مستقل نہیں کی جارہی ہے جہاں پر سرکاری اسکولز موجود ہے ان اسکولز کو محکمہ تعلیم بلوچستان میں ضم کی جائے جہاں اسکولز نہیں انہیں مکمل اسکول قرار دیا جائے تاکہ باقائدہ طریقے سے اسکولز میں بچوں اور اساتذہ کرام کا وقت ضائع نہ ہو انہوں نے مزید کہا ہے بلوچستان میں تمام مکاتب فکر کو سرآپا احتجاج بنا دی دی گئی کسی شعبے سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو انکے قانونی حقوق بھی نہیں دیئے جارہے انہوں نے مزید کہا ہے کہ یکساں نظام تعلیم قائم نہیں کی جاجسکتی کمیونٹی اسکولز سہولیات سمیت تمام بنیادی تعلیمی ضروریات سے محروم ہے محنتی اساتذہ اپنی مدد آپ کے تحت اسکولز چلا کر over age ہوچکے ہے لیکن انکے تنخواہ عام مزدور کے سرکاری قانون کے مطابق اجرت سے بھی کم ہے جوکہ ان محنتی اساتذہ کے ساتھ ناانصافی ہے بی ایس او بیسک کمیونٹی اسکولز ایجوکیشن پراجیکٹ کے اساتذہ اور طلباء و طالبات کے لئے ہر سطح پر آواز بلند کرے گی ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!