"ایتم اِسکا حق برے ناحق خلیک کائک”

Spread the love

(فوک لورآن) پولکار : نصیب ڈومکی

جنگل نا بادشاہ، شیر بیمار مس تو طبیب ئس رُغاماتہ ہُچ ئنا جڑک ئس کُن جوان مریسہ۔ شیر اعلان کرے جڑک ئس اتبو کنکن۔
دے ئس کہ دا اعلان ملا شوک ئنا خف آ تما تو باز پریشان مس۔ تینتو تینٹ پارے کہ اے ملا جان پریشانی اٹ ہِچ ئس جوڑ مفک بس نرہ کش تینے۔
دم اسٹ ئس کہ ملا شوک نت تے آ تف کرے ہندن نرہ کہ کس پائے ملخموت پدٹ تا جمازہ اٹ بننگ ئے۔
ملا شوک جنگل اٹ الشسا ئس تو پیل ئس خنا تہ ہرفے ای آن تہ۔
” ملا الہ دن تُسیفینس تینے ہرانگ نرنگ ئُس؟ "
ملا ورندی تس:
"سہی افس شیر ہُچ ئنا خڑک ئس خوائسونے "
پیل مخا ولدا پارے ” بابا جڑک اس خوائسونے توڑاہی کہ نےخوائسونے”
شوک پیل نا مون اٹی ہُرسا پارے ” یارنی ہم یقل آن پخیرس خبر اف نے مچا جنگل جائل ءُ نازانت آن پر ئے؟”
پیل پارے ” تو مرے گڑا! "
"کنا یار ! کنا پارکہ دا ہُچ ئنا جڑک ئسے تو کنا ہم بیخ بریک” شوک تفے کیدسا مُستی پارے "اگہ ایتم اسکان کس انصاف والاس برے پائے کہ دا ہُچ ئناجڑک ئس اف امو وخت اسکان شیر کنا ہم مون ئے مون کیک۔”

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!