تعلیمی پسماندگی کے خاتمے کے لیے لیے کسی بھی مثبت اقدام کا بھر پور حمایت کرینگے۔ بی ایس او

Spread the love

بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے مرکزی وائس چیئرمین خالد بلوچ اور کوئٹہ زون کے آرگنائزر صمند بلوچ نےسرکاری ٹی وی کے ایک پروگرام میں بلوچستان کے تعلیمی مسائل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میں تعلیمی اداروں کے عدم فعالی کی سب سے بڑی وجہ اساتذہ کی کمی ہے انہوں مطالبہ کیا کہ اساتذہ کے کمی اور طلباء و طالبات کو کتابیں وقت پر فراہمی جیسے مسائل کو جلد از جلد حل کیا جائے
تعلیمی اداروں میں بنیادی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے دور دراز کے بچے شہری طلباء کا مقابلہ نہیں کرسکتے ۔
انہوں نے کہا کہ بی ایس او تعلیمی پسماندگی کے خاتمے کے لئے کسی بھی مثبت اقدام کا بھرپور حمایت کرے گی۔
سوراب اور بیسمہ کے انٹر کالجز سالوں سے زیر تعمیر ہے لیکن تاحال مکمل نہیں ہوسکے انہوں نے مزید کہا کہ طلباء و طالبات کے سہولت کے لئے تمام علاقوں میں لائبریری قائم کئے جائے اور تعلیمی پسماندگی کے خاتمے کے لئے ڈیجٹل لائبریوں کا قیام ضروری ہے تعلیمی پسماندگی کے خاتمے کے لئے بی ایس او شعور و آگاہی پیدا کررہی یے تعلیمی اداروں کو یکساں سہولیات دی جائے اور طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ کیا جائے ۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!