برمش یکجہتی کمیٹی کے زیر اہتمام ڈنک واقعہ کے خلاف قلات میں ریلی و مظاہرہ

Spread the love

برمش یکجہتی کمیٹی قلات کے زیر اہتمام ڈنک واقعہ کے خلاف ریلی نکالی گئی اور مظاہرہ کیا گیا. اس موقع پر برمش یکجہتی کمیٹی قلات، سیاسی و سماجی اور انسانی حقوق کے رہنماؤں نے بڑی تعداد میں شرکت کی. اس موقع پر انھوں نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے، جن پر "برمش کو انصاف دو” کے نعرے درج تھے. ریلی مختلف شاہراہوں سے ہوتے ہوئے شہید لونگ خان چوک پر جلسے کی شکل اختیار کر گئی. اس موقع پر مقررین اسرار بلوچ، علی آحمد بلوچ، کامریڈ ظہور بلوچ ،ڈاکٹر زرک بلوط، مقدم بلوچ، واحد بلوچ، ملک ہاشم، علی اکبر بلوچ، مبارک معمد حسنی، حافظ قاسم اور فضل الرحمان رحمانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت عوام کے جان و مال کو تحفظ دینے میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے. ڈنک واقع بلوچ ننگ و ناموس پر حملہ ہے. حکومت کی ناکامی کا واضح ثبوت ھیکہ ڈیتھ اسکواڈ کے مسلح کارندے چوری ڈکیتی، اغواء برائے تاوان کے بعد گھروں تک پہنچ کر اب بلوچ خواتین کو بھی نہیں بخشے. ان حالات میں بلوچ قوم خاموش نہیں رہیگی. حکومت ڈیتھ اسکواڈ کا خاتمہ کر کے بلوچ عوام کو عزت کی زندگی گزارنے کا موقع فراہم کریں. یہ گروہ جان بوجھ کر بلوچستان کے حالات خراب کرنا چاہتے ہیں، ان کا مقصد کشت و خون اور قتل و غارت گری کے بازار کو گرم رکھنا ہے. حکومت ان کو غیر مسلح کر کے عوام کے جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنائیں اور واقع میں ملوث لوگوں کو گرفتار کر کے کیفرکردار تک پہنچا دیں. صرف حکومت کے اخباری بیانات اور تعریفی بیانات کے زریعے بلوچ عوام کو مطمئن نہیں کیا جا سکتا. انصاف کے حصول کے لیے بلوچ قوم سراپا احتجاج ہیں. انسانی حقوق کے تنظیمیں اور عالمی برادری بلوچ قوم پر جاری مظالم کا فوری نوٹس لے کر برمش کو انصاف دلانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں.

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*

error: Content is protected !!